سماجی فاصلہ رکھنے سے کیا مُراد ہے؟

ان دنوں سماجی فاصلہ رکھنے کی اہمیت کو جانیے

UNICEF
SD 1 New
UNICEF
28 مارچ 2020

آج کل سماجی فاصلہ رکھنے سے مُراد لوگوں کے بڑے اجتماعات میں شامل ہونے سے گریز کرنا اور دوسرے لوگوں سے کم سے کم 3 فٹ یعنی 1 میٹر کا فاصلہ قائم رکھنا ہے تاکہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکا جاسکے۔

 

  1. ہاتھ ملانے یا گلے لگانے سے پرہیز کریں۔ ایک دوسرے کو 1 فٹ کے فاصلے پر کھڑے ہوکر سلام کریں یا ہیلو کہیں۔
  2. حکومتِ پاکستان کی طرف سے فراہم کردہ رہنمائی کی روشنی میں عوامی مقامات پر لوگوں کے بڑے اجتماعات اور رش کے مقامات  مثال کے طور پر شاپنگ مال، سینما گھر، ریستوران اور دیگر کلب اور کانفرنس ہالز میں جانے سے گریز کریں۔
  3. عوامی ٹرانسپورٹ کا غیر ضروری استعمال ہرگز نہ کریں۔ اگر ممکن ہوتو سفر کرنے کے لئے ان اوقات کا انتخاب کریں جب لوگوں کی بڑی تعداد سفر نہ کررہی ہو۔
  4. کسی بھی ایسے شخص سے ملنے سے گریز کریں جس میں سانس کی بیماری کی علامات نظرآ رہی ہوں۔ ان علامات میں کھانسی، ناک بہنا، بخار، سانس لینے میں مشکل پیش آنا اور جسم میں درد شامل ہیں۔
  5. دیگر اہل خانہ اور دوستوں کے ساتھ جمع ہونے سے گریز کریں۔ ملاقاتوں کی بجائے دور سے رابطہ ممکن بنانے والی ٹیکنالوجی مثلاً موبائل فون اور سوشل میڈیا کا استعمال کریں۔
  6. کووِڈ- 19 کے بارے میں مزید معلومات، ہسپتال کے سلسلے میں مشورے یا پھرحوالے (ریفرل)  کے لئے اپنے ڈاکٹر یا پھر ہیلپ لائن سے رابطہ کریں۔
  7. اپنے اور اپنے خاندان کی حفاظت کے لئے گھر سے دفتری کام کریں۔ گھر میں رہتے ہوئے ہوئے کمروں کو ہوادار بنائیں اور باقاعدگی سے کھڑکیاں کھولیں۔
  8. اگر آپ نے گھر کے لئے سودا سلف خریدنے کے لئے کسی سٹور، مارکیٹ یا بینک جانا ہو تو دوسرے لوگوں سے  کم ازکم 3 فٹ یعنی 1 میٹر کا فاصلہ رکھیں تاکہ وائرس کے پھیلاؤ کے خطرات میں کمی لائی جاسکے۔